آزاد جموں وکشمیر الیکشن کمیشن نے بلدیاتی انتخابات 2022 کے لیے اپنی آئینی و قانونی ذمہ داریاں پوری کرتے ہوئے تمام امور مکمل کر لیے

0

آزاد جموں وکشمیر الیکشن کمیشن نے بلدیاتی انتخابات 2022 کے لیے اپنی آئینی و قانونی ذمہ داریاں پوری کرتے ہوئے تمام امور مکمل کر لیے

الیکشن کمیشن نے بلدیاتی انتخابات کے لیے اپنی آئینی و قانونی ذمہ داریاں پوری کرتے ہوئے تمام امور مکمل کر لیے ہیں۔ پولنگ میٹریل ریٹرننگ آفیسران کے دفاتر تک پہنچایا جا چکا ہے اور بیلٹ پیپرز کی پرنٹنگ کا عمل بھی آئندہ چند روز میں مکمل ہو جائے گا۔

حکومت کی طرف سے امن و امان کے قیام کے لیے سیکورٹی فورسز کی فراہمی کی یقین دہانی کروا دی گئی ہے تاہم پاکستان کے حالات کی وجہ سے سیکورٹی فورسز کی فراہمی میں کچھ مشکلات ضرور پیش ہیں جن کو دور کرنے کے لیے حکومت اور الیکشن کمیشن کی سطح پر کاوش جاری ہے اور امید ہے ان مشکلات کو دور کرتے ہوئے بلدیاتی انتخابات کا انعقاد اپنے مقررہ وقت پر ہونگے-

ترجمان الیکشن کمیشن نے اس مرحلہ پر مزید یہ کہا کہ بعض سیاسی زعماء و قائدین اور جماعتوں کی طرف سے فوج کی نگرانی میں انتخابات کروانے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے جس کے لیے الیکشن کمیشن اور حکومت کی سطح پر کوشش کی جا رہی ہیں اور ا س نسبت حکومت اور الیکشن کمیشن کی طرف سے حکومت پاکستان کو تحریک بھی کی گئی ہے تاہم آزادجموں وکشمیر کے اندر موجودہ اپوزیشن کی دونوں بڑی جماعتوں کی پارٹیز پاکستان میں برسر اقتدار ہیں فوج کی آمد وزارت داخلہ کی طرف سے ہدایات اور احکام جاری ہونے سے مشروط ہے،فوج اس وقت تک نہیں آ سکتی جب تک وزارت داخلہ فوج کو اس نسبت اجازت دیتے ہوئے احکام نہ دے جس کی نسبت بھی تحریک کی جا چکی ہے۔

ایسے میں ان جماعتوں کے سیاسی زعما پر بھی یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ حکومت پاکستان سے سیکورٹی فورسز کی فراہمی کے لیے اپنا کردار ادا کرتے ہوئے بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنانے میں اپنا مثبت کردار ادا کریں۔ اگر آزادکشمیر کے اندر بڑی سیاسی جماعتوں کے زعما اپنا کردار ادا کریں تو سیکورٹی فورسز کی فراہمی کے مسئلہ میں درپیش مشکلات کو دور کرنے میں آسانی ہو سکتی ہے۔ یہ بات ترجمان الیکشن کمیشن نے ایک پریس ریلیز میں بتائی ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.